We have moved all non-book items like Speeches, Madani Pearls, Pamphlets, Catalogs etc. in "Pamphlet Library"

Book Name:Yateem kisay kehtay hain?

کے پابند ہیں وہ سخت امتِحان میں پڑجاتے ہیں کیونکہ فی زمانہ خاندان والوں کا ذِہن بنانا ہر ایک کے بس کا کام بھی نہیں ہے۔اگر کہیں صراحتاً یا دلالۃً معلوم ہو  کہ میت کے گھر والوں نے ابھی تک  ترکہ تقسیم نہیں کیا اور میت کے وُرَثاء میں نابالغ بھی ہیں تو وہاں کھانے پینے وغیرہ سے اِجتناب کیا جائے۔(1)

یتیم کا مال کھانے سے بچنے کا جذبہ

سُوال:یتیم کا مال کھانے سے بچنے کے حوالے سے ایک دو واقعات بیان فرما دیجیے تاکہ یتیم کا مال کھانے سے بچنے کاجذبہ پیدا ہو ۔ 

جواب:یتیم کا مال ناحق  کھانے کی قرآن وحدیث میں جو وعیدات ہیں ان پر غو ر کر کے اپنے آپ کو ڈ رایا جائے تو  اِنْ شَآءَ اللہ عَزَّ وَجَلَّ اس سے بچنے میں کامیابی حاصل ہو سکتی ہے۔ بہرحال ایک مُحتاط مبلغِ دعوتِ اسلامی  کا واقِعہ پیش کیا جاتا ہے اِنْ شَآءَ اللہ عَزَّ وَجَلَّ آپ کو اس میں اِحتیاط کے کافی مشکبار مَدَنی پھول چننے کو ملیں گے چُنانچِہ ایک مبلغِ دعوتِ اسلامی اپنے سفر میں بعض اوقات ایک ایسے گھر میں قِیام کرتے تھے جہاں تین سگے بھائی اکٹھے رہتے تھے۔ سب سے بڑا بھائی مُتَوَسِّطُ الْحال تاجِر تھا۔اُس کی وفات ہو گئی،ان مبلغِ دعوتِ اسلامی کو پھر سفر میں

مـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــدینـــہ

[1]…… میٹھے میٹھے اسلامی بھائیو! اگر کسی کے  گھر میں فوتگی ہو جائے اور میت  ترکہ چھوڑے  تو جلد از جلد دارالافتاء اہلسنَّت سے شرعی رہنمائی لے کر اس ترکے کو وُرَثاء میں تقسیم کر لیا جائے اسی میں بچت اور عافیت ہے ۔