We have moved all non-book items like Speeches, Madani Pearls, Pamphlets, Catalogs etc. in "Pamphlet Library"

Book Name:Nekiyan Chupao

ضائِع ہو جاتا ہے اور قرآنِ کریم میںاللہ عَزَّ وَجَلَّ نے اِس کی  مُمانعت فرمائی ہے چُنانچہ پارہ 3 سورۃُالبقرہ  کی آیت نمبر 264 میں اِرشادِ ربُّ  العباد ہے:

یٰۤاَیُّہَا الَّذِیۡنَ اٰمَنُوۡا لَا تُبْطِلُوۡا صَدَقٰتِکُمۡ بِالْمَنِّ وَالۡاَذٰیۙ کَالَّذِیۡ یُنۡفِقُ مَالَہٗ رِئَآءَ النَّاسِ وَلَا یُؤْمِنُ بِاللہِ وَالْیَوْمِ الۡاٰخِرِؕ

ترجمۂ کنز الایمان:اے ایمان والو! اپنے صدقے باطل نہ کر دو احسان رکھ کر اور ایذا دے کر  اس کی طرح جو اپنا مال لوگوں کے دِکھاوے کے لیے خرچ کرے اور اللہ اور قیامت پر ایمان نہ لائے ۔

اِس آیتِ مُبارَکہ کے تحت حضرت علّامہ عبدُ اللہ بن احمد بن محمود نسفی عَلَیْہِ رَحْمَۃُ اللّٰہ ِالْقَوِی فرماتے ہیں:یعنی جس طرح منافق کو اپنے مال خرچ کرنے  سے رِضائے رب العزت اور ثوابِ آخرت مقصود نہیں ہوتا وہ اپنا مال لوگوں کو دِکھانے کے لیے خرچ کر کے ضائِع کر دیتا ہےایسے ہی تم اِحسان جتا کر اور اِیذا دے کر اپنے صدقات کا ثواب  ضائِع نہ کرو۔(1)

نیکیاں چھپانے کا مقصد

عرض:اپنی نیکیاں پوشیدہ رکھنے کا کیا  مقصد ہے؟

اِرشاد:نیکیاں چھپانے کا مقصد ان کو ضائِع ہونے سے بچانا ہے کیونکہ نفس و

مـــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــــدینـــہ

[1]…… تفسیرِ نسفی ،پ۳ ،البقرة ، تحت الآیة :۲۶۴، ص ۱۳۷