We have moved all non-book items like Speeches, Madani Pearls, Pamphlets, Catalogs etc. in "Pamphlet Library"

Book Name:Hatho Hath Phuppi Say Sulah Karli

{2} رشتے دار سے سُلوک کی صورتیں

      صِلَۂ رِحم( یعنی رِشتے داروں کے ساتھ سلوک) کی مختلف صورَتیں ہیں، اِن کو ہَدِیّہ و تحفہ دینا اور اگر ان کو کسی بات میں تمہاری اِعانت (یعنی امداد)درکار ہو تو اِس کا م میں ان کی مدد کرنا، انہیں سلام کرنا،ان کی ملاقات کو جانا، ان کے پاس اُٹھنا بیٹھنا، ان سے بات چیت کرنا، ان کے ساتھ لُطف و مہربانی سے پیش آنا۔  

 (دُرَر، ج۱ ص۳۲۳ )

{3} پرد یس ہو تو خط بھیجا کرے

     اگر یہ شخص پردیس میں ہے تو رشتے والوں کے پاس خط بھیجا کرے، ان سے خط و کتابت جاری رکھے تاکہ بے تعلُّقی پیدا نہ ہونے پائے اور ہوسکے تو وطن آئے اور رشتے داروں سے تعلُّقات تازہ کرلے، اِس طرح کرنے سے مَحَبَّت میں اِضافہ ہوگا۔ (رَدُّالْمُحتار  ج۹ ص۶۷۸) ( فون یا انٹرنیٹ کے ذَرِیعے بھی رابطے کی ترکیب مفید ہے)

{4} پرد یس میں ہو، ماں باپ بلائیں تو آنا پڑے گا

      یہ پردیس میں ہے والدین اِسے بلاتے ہیں تو آنا ہی ہوگا، خط لکھنا کافی نہیں ہے ۔ یوہیں والدین کو اس کی خدمت کی حاجت ہو تو آئے اور ان کی خدمت کرے، باپ کے بعد دادا اور بڑے بھائی کا مرتبہ ہے کہ بڑا بھائی بَمَنزِلہ باپ کے ہوتا ہے ،بڑی بہن اور خالہ ماں کی جگہ پر ہیں، بعض علما نے چچا کو باپ کی مثل بتایا اور حدیث: عَمُّ الرَّجُلِ صِنْوُ اَبِـیْہِ (یعنی آدمی کا چچا باپ کی مثل ہوتا ہے ) سے بھی یہی مستفاد ہوتا(یعنی نتیجہ نکلتا)ہے۔ ان کے علاوہ